page contents

History of Kasur

History of Kasur
1,071 Views

History of Kasur

History of Kasur

قصور لاہور کے 55 کلومیٹر جنوب مشرق میں واقع ہے یہ بابا بلھے شاہ کے شہر سے بھی مشہور ہے اور یہ پاکستان کے سب سے قدیم شہروں میں سے ایک ہے
یہ بھارت اور پاکستان کے بارڈر پر ہے اور اس کی پریڈ تقریب جو روزانہ بارڈر پر ہوتی ہے دنیا بھر میں مشہور ہے

History of Kasur

ضلع قصور لاہور کے ضلع سے الگ ہونے کے بعد یکم جولائی 1967 کو وجود میں آیا
قصور اگرچہ عمر کے طور پر کم نہیں ہے لیکن لاہور ہی کا ایک بھائی ہے
قصور کے نام کے بارے میں مختلف روایات موجود ہیں
ایک روایت یہ ہے کہ شہر قصور کو کاسو رام جو کہ رام چندر کا بیٹا تھا کے نام سے قائم کیا گیا تھا
دوسری روایت ہمیں بتاتی ہے کہ یہ شہر اکبر کے دور میں کندھار کے ایک پٹھان خاندان کی طرف سے قائم کیا گیا تھا
جو پٹھان کوٹ کے طور پر جانا جاتا یہاں ایک چھوٹا سا قلعہ تعمیر کیا تھا
اور یہاں پر مختلف خاندانوں کے فردوں کے نام سے تقریبا بارہ کوٹ ہے
یہ نام اب بھی موجود ہیں. عربی میں، کوٹ یا قلعہ کو (قصر) کے طور پر جانا جاتا ہے
قصور شہر کی مشہور سوگات اس کی بہت مسالے دار مچھلی جو کہ شیخ جاوید کی دوکان پر ملتی ہے یہ قصور میں جاوید فش کارنر کے نام سے مشہور ہے اور لوگ بہت دور دور سے اس کو کھانے آتے ہے اور قصوری فالودہ بھی بہت مشہور ہے فالودے کی دوکانیں تو بہت ساری ہے لیکن ان میں سب سے زیادہ ایوب فالودہ پوائنٹ ہے جو کہ قصور بازار کے اندر ہے قصوری میتھی بھی پرے پاکستان میں بہت مقبول ہے اور اس کے علاوہ قصور کا سوہہن حلوہ بھی بہت مشہور غذا ہے اور اس کے علاوہ، یہ نور جہان مشہور پاکستانی گلوکار اور اداکارہ ہے ان کا آبائی شہرں بھی قصور ہی ہے
اور یہ شہر بابا بلے شاہ کے نام سے بھی مشہور ہے جن کا دربار اس شہر میں ہے
قصور روحانی اور ثقافتی روایات میں ایک شاندار ماضی ہے جس میں صوفی سنتوں کی طرح بابا بللہ شاہ، بابا کمال چشتی، شاہ عنايت قادری، امام شاہ بخاری، ایک طرف اور موسیقاروں کی طرف سے، استاد بڈ غلام علی خان، استاد برکات علی خان، استاد امانت علی خان، ملکا ترنم نورجہاں وغیرہ. ضلع میں اہم ثقافتی واقعات بابا بللہ شاہ اور بابا امام شاہ بخاری کا عرص مبارک ہیں

موسم

شہر کی آب و ہوا بہت اچھی ہے موسم گرما کا موسم اپریل سے شروع ہوتا ہے اور ستمبر تک جاری ہے
جون کا مہینہ سب سے گرم مہینہ ہوتا ہے
اس ماہ مہں زیادہ سے زیادہ اور کم از کم درجہ حرارت تقریبا 40 اور 27 ڈگری سینٹیگریڈ ہے
موسم سرما کا موسم نومبر سے مارچ تک رہتا ہے
جنوری کا مہینہ سرد ترین مہینہ ہے اس مہینے میں زیادہ سے زیادہ اور کم از کم درجہ حرارت 20 اور 6 ڈگری سینٹیگریڈ ہوتا ہے

مزید اردو پوسٹ کیلئے روزانہ ہماری ویب سائٹ بیسٹ اردو ڈاٹ کام وزٹ کریں اور پوسٹ کی رائیٹ سائیڈ پر اپنا ای میل درج کر کے سب سکرائب کریں اور ہر پوسٹ بذریعہ ای میل اپنے ان باکس میں حاصل کرے شکریہ

besturdu

Leave a Reply

Your email address will not be published.