tariq bin ziyad

138
2232
tariq bin ziyad
tariq bin ziyad

tariq bin ziyad

tariq bin ziyad

۔۔۔۔طارق بن زیاد۔۔۔۔۔۔۔

عظیم مسلم جرنیل طارق بن زیاد اسلامی تاریخ میں منفرد مقام کا حامل ہے طارق بن زیاد 680ء کے لگ بھگ پیدا ہوا۔ طارق بن زیاد کا والد “ذیاد “نامور سپہ سالار موسیٰ بن نصیر کا غلام تھا ۔بہادر اور جنگجو زیاد نے موسیٰ بن نصیر کے ہمراہ سولہ جنگی معرکوں میں حصہ لیا اور بعض انتہائی نازک مواقع پر اپنے محسن موسیٰ بن نصیر کی جان بچائی ۔زیاد ایک لڑائی کے دوران شدید زخمی ہوا اور کافی عرصہ بیمار رہ کر انتقال کر گیا ۔زیاد کی وفات کے بعد ان کا بیٹا طارق اور بیوی حلیمہ، موسیٰ بن نصیر کی سرپرستی میں آگئے ۔
موسی بن نصیر نے92 ہجری میں طارق بن زیاد کو سات ہزار بربری فوج دے کر اندلس پر حملہ کرنے کے لیے روانہ کیا۔ یہ فوج چار بحری جہازوں پر سوار ہو کر روانہ ہوئی اور جبل الطارق کے مقام پر اتری۔ طارق بن زیاد نے انوکھی جنگی حکمت عملی کا مظاہرہ کرتے ہوئے واپسی کی امید “بحری جہازوں” کو آگ لگوادی تاکہ مسلمان واپسی کا نہ سوچیں بلکہ صرف اور صرف فتح کے لئے جنگ کریں ۔دریائے والڈیٹ کے کنارے مسلمانوں اور راڈرک کی فوجوں کے درمیان مقابلہ ہوا جس میں مسلمانوں کو کامیابی حاصل ہوئی ۔
طلیطلہ گھات فرمانرواؤں پایہ تخت تھا۔ اس قلعے پر طارق نے خود فوج کشی کی لیکن طارق کی آمد سے قبل ہی اہل طلیطلہ شہرخالی کر کے جاچکے تھے اور اپنے پیچھے قیمتی سامان جواہرات چھوڑ گئے تھے۔ ابنِ قتیبہ کے مطابق” طلیطلہ کی فتح سے مسلمانوں کواتنا سونا، چاندی، جواہرات اور قیمتی سامان حاصل ہوا جس کا شمار نہیں “۔
شمالی اندلس کے صوبوں کو فتح کرنے کے بعد مسلمانوں نے مغربی صوبوں پر دھاوا بولا اور کامیابیاں حاصل کیں اور پورے سپین پر قبضہ کرلیا

۔۔طارق بن زیاد کا مسلمانوں سے خطاب۔۔

”امابعد!لوگو! میدان جنگ سے اب کوئی مفر کی صورت نہیں ہے، آگے دشمن ہیں اور پیچھے دریا، خدا کی قسم صرف پامردی اور استقلال میں نجات ہے ،یہی وہ فتح مند فوجیں ہیں جو مغلوب نہیں ہو سکتیں، اگر یہ دونوں باتیں موجود ہیں تو تعداد کی قلت سے کوئی نقصان نہیں پہنچ سکتا اور بزدلی، کاہلی ،سستی، نامردی، اختلاف اور غرور کے ساتھ تعداد کی کثرت کوئی فائدہ نہیں پہنچا سکتی۔
لوگو! میری تقلید کرو، اگر میں حملہ کروں تو تم بھی حملہ آور ہو جاؤ اور جب میں رُک جاؤں تو تم بھی رُک جاؤ ،جنگ کے وقت سب مل کر ایک جسم بن جاؤ، میں اس سرکش پر حملہ کرکے دست بدست مقابلہ کروں گا، اگر میں اس حملے میں مارا جاؤں توتم رنج نا کرنا اور میرے بعد آپس میں جھگڑ کر لڑنا بیٹھنا ،اس سے تمہاری ہوا اکھڑ جائے گی اور تم دشمن کے مقابلے میں پیٹھ پھیردو گے اور قتل و گرفتار ہوکر برباد ہو جاؤ گے۔
خبردار !ذلت پر راضی نہ ہونا اور اپنے آپکو دشمن کے حوالے نہ کرنا، خدا نے مشقت اور جفاکشی کے ذریعے دنیا میں تمہارے لیے جو عزت و شرف اور راحت اور آخرت میں شھادت کاثواب مقدر کیا ہے اس کی طرف بڑھو، خدا کی پناہ اور حمایت کے باوجود اگر تم ذِلت پر راضی ہوگئے تو بڑے گھاٹے میں رہوگے، دوسرے مسلمان الگ تم کو برے الفاظ و میں یاد کریں گے ،جیسے ہی میں حملہ کرو تم بھی حملہ آور ہو جاؤ

طارق بن زیاد کی پہلی فتح

مسلمانوں کی سپین آمد کے وقت بادشاہ راڈرک کا ایک جرنیل تدمیر ساحل کے قریب ہی موجود تھا۔تدمیر کو جب مسلمانوں کی آمد کی اطلاع ہوئی تو اس نے مسلمانوں پر حملہ کر دیا لیکن اسے زبردست شکست کا سامنا کرنا پڑا اور وہ اپنی جان بچا کر بھاگ نکلا۔شکست خوردہ تدمیر نے راڈرک کو لکھا “اے شہنشاہِ! ہمارے ملک پر ایک غیر قوم نے حملہ کیا ہے میں نے ان لوگوں کا مقابلہ کیا مگر میری فوج ان کا مقابلہ نا کر سکی۔ضرورت ہے کہ اب نفسِ نفیس زبردست فوج اور طاقت کے ساتھ اس طرف متوجہ ہوں میں نہیں جانتا کے یہ حملہ آور کون ہیں،کہاں سے آئے ہیں،آیا آسمان سے اترے ہیں یا زمین سے نکل آئے ہیں

قرطبہ پر قبض

مسلمان سخت گرمی، طوفان اور بارش کی پرواہ کیے بغیر جو ارادہ کرتے اس کی تکمیل کے لیے سر دھڑ کی بازی لگا دیتے۔ قرطبہ پر قبضہ کرنے کے لیے طارق بن زیاد ایک ہزار سواروں کا دستار لے کر رات کی تاریکی ،سخت بارش اور طوفان میں قلعہ کی جانب روانہ ہوا ۔انتہائی نامناسب حالات کے باوجود شیرانِ اسلام قلعہ کے قریب پہنچ گئے۔ ایک مقامی باشندے نے بتایا! کے فصیل کے قریب انجیر کے درخت کے ساتھ قلعہ کی دیوار میں ایک شگاف ہے۔ مسلمانوں نے درخت تلاش کرکے شگاف کے رستے قلعہ کی فصیل تک رسائی حاصل کرلی ۔قلعہ کی فصیل کے قریب برجوں میں سے عیسائی سپاہی نکل کر لڑنے لگے۔ لیکن مسلمانوں نے سب پر قابو پالیا۔ صبح فجر کے وقت مسلمانوں نے قلعہ کا دروازہ کھول دیا اور باقی اسلامی لشکر بھی قلعہ میں داخل ہوگیا۔ قلعہ کے اندر بڑی زبردست جنگ لڑی گئی جس میں فرزندان توحید بڑی جانبداری سے لڑے اور بالآخر قلعہ فتح ہوگیا

طارق کی دعا

یہ غازی ،یہ تیرے پُر اسرار بندے
جنہیں تُو نے بخشا ہے ذوقِ خدائی
دو نِیم ان کی ٹھوکر سےصحراودریا
سِمٹ کر پہاڑ ان کی ہیبت سے رائی
دو عالم سے کرتی ہے بیگانہ دل کو
عجب چیز ہے لذّتِ آشنائی
شہادت ہے مطلوب و مقصودِ مومن
نہ مالِ غنیمت نہ کِشور کُشائی
خیابان میں ہے، مُنتظر لالہ کب سے
قبا چاہیے اس کو خُونِ عرب سے
کِیا تُو نے صحرا نشینوں کو یکتا
خبر میں ،نظر میں ،اذانِ سَحر میں
طلب جس کی صدیوں سے تھی زندگی کو
وہ سوز اس نے پایا انھی کے جگر میں
کُشادِ درِ دل سمجھتے ہیں اس کو
ہلاکت نہیں موت ان کی نظر میں
دلِ مردِ مومن میں پھر زندہ کردے
وہ بجلی کہ تھی نعرۂ ‘لا تذَر’ میں
عزائم کو سینوں میں بیدار کر دے
نگاہِ مسلماں کو تلوار کردے

 

جبلالطارق

اسپین پر حملہ کرنے کے لئے طارق کے جہازوں نے جہاں لنگر ڈالے اس جگہ کا نام لائنز راک تھا۔ اندلس فتح ہونے کے بعد اس کا نام جبل طارق رکھا گیا ۔ آج بھی اس مقام کو جبل طارق کے نام سے جانا جاتا ہے۔
طارق بن زیاد نے 711ءمیں جبرالٹر پر قبضہ کر کے اسے مملکتِ اسلامیہ کا حصہ بنا ڈالا ۔1309ءنے اس اہم مقام پر قشتالہ کے عیسائیوں نے قبضہ کیا پھر1333ءمیں بنو مرین نے اس جگہ پر اپنا تسلط قائم کیا بعدازاں اسے 1374ءمیں مملکت غرناطہ کے حوالے کردیا ۔1462ءمیں عیسائیوں نے مسلمانوں کو شکست دے کر اس کا قبضہ حاصل کرلیا۔
14اگست 1704ءکو یہ اہم مقام برطانیہ کے قبضے میں چلا گیا۔ جغرافیائی اعتبار سے جبل الطارق برطانوی افواج خصوصاً بحریہ کے لیے انتہائی اہم ہے ۔اس کا رقبہ 5.6 مربع کلومیٹر اور آبادی تقریبا 30000 ءہے ‏۔جبل الطارق سپین اور برطانیہ کے درمیان تنازعات کا باعث رہا ۔1713ء میں ایک معاہدے کے تحت اس کا کنٹرول برطانیہ کو دے دیا گی

مزید اردو پوسٹ کیلئے روزانہ ہماری ویب سائٹ بیسٹ اردو ڈاٹ کام وزٹ کریں اور اپنا ای میل درج کر کے سب سکرائب کریں اور ہر پوسٹ بذریعہ ای میل اپنے ان باکس میں حاصل کرے شکریہ

Click here and download besturdu.com android app

138 COMMENTS

  1. hello!,I really like your writing so much! proportion we keep up a correspondence extra approximately your post on AOL? I require an expert in this house to solve my problem. Maybe that’s you! Having a look ahead to peer you.

  2. Great – I should certainly pronounce, impressed with your web site. I had no trouble navigating through all the tabs as well as related information ended up being truly simple to do to access. I recently found what I hoped for before you know it at all. Quite unusual. Is likely to appreciate it for those who add forums or anything, website theme . a tones way for your client to communicate. Nice task.

  3. You can definitely see your enthusiasm within the paintings you write. The sector hopes for even more passionate writers like you who aren’t afraid to mention how they believe. All the time go after your heart. “We are near waking when we dream we are dreaming.” by Friedrich von Hardenberg Novalis.

  4. 【邀稿】夏天前一定要成為鑽石系發光女孩♥YOKO身體保養系列 @ B2B崔咪TRAMY :: 痞客邦 :: 阿 玉不琢不成器~肌膚不磨不成鑽(亂入耶 飛踢!!!)今年夏天前就是'一定要成為鑽石系發光女孩啦!!鑽石系女孩就是…..遠遠走過來你就覺得這位同學旁邊是不是有隱形人在幫她打spot

  5. It is appropriate time to make some plans for the future and it is time to be happy. I have read this post and if I could I desire to suggest you few interesting things or suggestions. Perhaps you could write next articles referring to this article. I wish to read more things about it!

  6. Undeniably believe that which you said. Your favorite justification seemed to be on the net the simplest thing to be aware of. I say to you, I certainly get annoyed while people consider worries that they plainly don’t know about. You managed to hit the nail upon the top and defined out the whole thing without having side-effects , people can take a signal. Will probably be back to get more. Thanks

  7. Terrific paintings! That is the kind of info that should be shared across the internet. Shame on Google for no longer positioning this submit upper! Come on over and seek advice from my website . Thank you =)

  8. Hi my family member! I want to say that this article is amazing, nice written and come with approximately all important infos. I would like to look extra posts like this .

  9. Hey very nice site!! Guy .. Beautiful .. Amazing .. I will bookmark your website and take the feeds also¡KI’m satisfied to find so many helpful information here in the publish, we need work out more strategies on this regard, thanks for sharing. . . . . .

  10. Magnificent goods from you, man. I have understand your stuff previous to and you’re just too fantastic. I actually like what you have acquired here, really like what you are saying and the way in which you say it. You make it enjoyable and you still take care of to keep it sensible. I can’t wait to read much more from you. This is actually a great website.

  11. I have been absent for some time, but now I remember why I used to love this web site. Thanks , I will try and check back more often. How frequently you update your site?

  12. Thank you for sharing excellent informations. Your website is very cool. I am impressed by the details that you have on this blog. It reveals how nicely you understand this subject. Bookmarked this web page, will come back for extra articles. You, my pal, ROCK! I found just the info I already searched all over the place and just couldn’t come across. What a great site.

  13. I simply desired to say thanks all over again. I’m not certain the things that I would have taken care of in the absence of the actual smart ideas shared by you concerning such area. It was a alarming scenario for me personally, but discovering a new specialised fashion you dealt with the issue forced me to weep for gladness. Extremely grateful for this help and as well , believe you recognize what a powerful job your are doing teaching many others thru your web blog. More than likely you haven’t met all of us.

  14. Its good as your other blog posts : D, thanks for putting up. “Say not, ‘I have found the truth,’ but rather, ‘I have found a truth.'” by Kahlil Gibran.

  15. Nice read, I just passed this onto a colleague who was doing some research on that. And he actually bought me lunch because I found it for him smile Therefore let me rephrase that: Thank you for lunch!

  16. I needed to create you a very small word so as to say thanks over again just for the splendid secrets you have featured on this page. It has been unbelievably generous of you to convey extensively precisely what a few individuals would’ve sold as an ebook to help make some profit for themselves, especially given that you could have done it in case you decided. The advice also worked like the fantastic way to know that someone else have a similar passion really like mine to realize very much more pertaining to this problem. I’m sure there are thousands of more pleasurable moments up front for those who go through your site.

  17. I simply could not go away your web site prior to suggesting that I really enjoyed the standard info a person provide to your guests? Is gonna be back continuously in order to inspect new posts

  18. Hello very nice web site!! Guy .. Excellent .. Wonderful .. I will bookmark your site and take the feeds additionally¡KI am happy to search out a lot of useful information right here within the submit, we’d like work out extra strategies in this regard, thanks for sharing. . . . . .

  19. You can certainly see your enthusiasm in the paintings you write. The sector hopes for even more passionate writers like you who aren’t afraid to say how they believe. All the time follow your heart.

  20. You can definitely see your skills in the work you write. The arena hopes for even more passionate writers like you who are not afraid to say how they believe. All the time follow your heart. “If the grass is greener in the other fellow’s yard – let him worry about cutting it.” by Fred Allen.

  21. Whats Taking place i am new to this, I stumbled upon this I have discovered It absolutely useful and it has helped me out loads. I am hoping to contribute & help different customers like its helped me. Great job.

  22. Definitely believe that which you stated. Your favorite reason appeared to be on the web the easiest thing to be aware of. I say to you, I certainly get annoyed while people consider worries that they plainly don’t know about. You managed to hit the nail upon the top as well as defined out the whole thing without having side effect , people can take a signal. Will probably be back to get more. Thanks

  23. Nice weblog here! Additionally your website so much up very fast! What web host are you the usage of? Can I get your affiliate link to your host? I want my site loaded up as quickly as yours lol

  24. Pretty nice post. I just stumbled upon your blog and wished to say that I have really enjoyed surfing around your blog posts. In any case I will be subscribing to your rss feed and I hope you write again very soon!

  25. I enjoy you because of your own labor on this web site. My mother loves doing research and it is obvious why. We all learn all about the dynamic means you produce useful secrets on this blog and as well increase contribution from the others on that topic while my princess is certainly becoming educated a whole lot. Take pleasure in the rest of the year. You have been carrying out a glorious job.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here